اردو کارواں کے عشرہء اردو کی اختتامی تقریب میں اردو کارواں کی میگزین اور ویب سایٹ کا اجراء

اردو کارواں کے عشرہء اردو کی اختتامی تقریب میں اردو کارواں کی میگزین اور ویب سایٹ کا اجراء

 انعامات حاصل کرنے والے طلباء میں جوش و خروش

(ایسٹرن کریسینٹ نیوز ڈیسک)

ممبیء 24 دسمبر.. اردو کارواں کے تحت عشرہء اردو کا افتتاحی جلسہ اور تقسیم انعامات حج ہاوس  کے کانفرنس ہال میں منعقد کیا گیا. ڈاکٹر ظہیر قاضی صدر انجمن اسلام  اور صدر جلسہ نے اردو کارواں کی سرگرمیوں کی ستایش کرتے ہوے کہا کہ اردو کارواں جس مقصد کو لے کر آگے بڑھ رہا ہے وہ  اس کے اس کاز میں آنے ساھ ہیں. اس موقع پر انھوں نے مفید و کارآمد مشوروں سے بھی نوازا.اور انعام حاصل کرنے والے طلباء و طالبات کی حوصلہ افزائی و مبارکباد دی.

سی او حج ہاوس ڈاکٹر مقصود احمد خان نے  اردو کارواں کی ستایش کرتے ہوے کہا کہ اردو زبان و ادب کے فروع کے لیے یہ بہت ضروری ہے اس زبان کو ان لوگوں تک پہنچانے کی کوشش کرنی چاہیے جن کی مادری زبان اردو نہیں ہے یا وہ طلباء و طالبات جو اردو زبان بطور مضمون نہیں لیتے.

سلیم موٹر والا ٹرسٹی صفا ہوی اسکول و جونیر کالج نے کہا کہ وہ حیرت زدہ ہیں کہ اتنے کم عرصے میں اس تنظیم نے اپنے دایرے کو اتنا وسیع کر لیا اور آج اس کے ساتھ ممبیء اور مضافات کے کالجوں کی بڑی تعداد منسلک ہے. انھوں نے خواہش ظاہر کی کہ اردو کارواں صفا جونیر کالج میں بھی مقابلے منعقد کرے.

اردو کارواں کے صدر فرید احمد خان نے بتایا کہ رواں سال میں اردو کارواں اور عشرہء اردو میں کل ملا کر 60 کے قریب پروگراموں کا انعقاد کیا گیا، ان میں مختلف مقابلے، ورکشاپ، اردو اصناف سخن پر لکچر، مذاکرہ، تبادلہ خیال، گروپ ڈسکشن، سر فہرست ہیں... اور اس سے بھی اہم بات کہ اردو کی خوشبو متھی بای کالج، ولسن کالج ،ٹاٹا انسٹیٹیوٹ اور ایس این ڈی تک پہونچی ہے. انھوں نے مزید کہا کہ یہ پروگرام ریکارڈ بنانے کے لیے نہیں بلکہ عصر حاضر میں اس کی ضرورت و اہمیت ہے اس لے اکھے گیے.

پروفیسر شبانہ خان جو اس جلسہ کی نظامت کے فرائض بھی انجام دے رہی تھیں معلومات فراہم کی کہ اردو کارواں دوسری زبانوں کے ادب کے ساتھ مل کر کام کر رہا ہے. مراٹھی شاعر کسماگراج کی سالگرہ کے موقع پر ہم مراٹھی اسکولوں اور شعبہء مراٹھی میں جا کر پروگرام کرتے ہیں اردو  ادب کے طلباء و طالبات مراٹھی ادب کو پیش کرتے ہیں اور مراٹھی کے طلباء اردو ادب پر بات کرتے ہیں. اس کے علاوہ شعبہء ہندی کے اشتراک اردو کارواں پروگرام منعقد کرتا ہے جس کے تحت اردو اور ہندی کے مشترکہ ادیب و شاعر پر طلباء پیپر  پریزیڈنٹ کرتے ہیں. اور غیر اردو داں طبقے کے لیے باقاعدہ کلاس بھی چلای جاتی ہے.

اس موقع پر اردو کارواں نے اپنی تنظیم کی میگزین کا اجراء بھی کیا بنام *اردو کارواں **

اس کے علاوہ اردو کارواں ویب سایٹ کا افتتاح بھی کیا گیا. جس کو صفوان ناقد طالب علم ودیا انکار انجیرنگ کالج ایم ای سال اول  نے  ڈیزاین کیا 

پروگرام کے آخر میں طلباء و طالبات کو انعامات اور سرٹیفکیٹ سے نوازا گیا جن میں، انجمن اسلام جونیر کالج سی ایس ٹی مہاراشٹر کالج، عوامی کالج گوونڈی، ڈی ایڈ کالج، ایس این ڈی ٹی کالج، رییس ہای اسکول و جونیر کالج بھیونڈی خلافت ہاوس ،فروید میموری کالج بھیونڈی، صمدیہ جونیر کالج بھیونڈی ،الحمد جونیر کالج بھیونڈی، عبداللہ پٹیل کالج ممبرا، اکب پیر بھائی کالج گرانٹ روڈ، آر سی ڈی ایڈ کالج امام باڑہ ، انجمن اسلام باندرہ بوایز، انجمن اسلام کرلا، ماپ خان جونیر کالج، اور انعام یافتگان میں اساتذہ کرام موجود تھے محمد رفیع اردو اسکول گوونڈی، راجیو گاندھی اردو اسکول گونڈی وغیرہ کا نام سر فہرست ہے.

اردو کارواں کی اختتامی تقریب کے موقع پر ارشد صدیقی، ڈاکٹر خالد، محمود حکیمی ، مولانا ساجد، عوامی کالج، صمدیہ کالج ،الحمد کالج، عبداللہ پٹیل کالج کے اساتذہ و طلباء موجود تھے شہانہ مس، شبانہ ونو پرنسپل ڈی ایڈ خلافت ہاوس بایکلہ ،ظفر عباس سر محسن ساحل سر، وقار سر، سایرہ خان پرنسپل آر سی ڈی امام باڑہ،وایس پرنسپل  صمدیہ کالج بھیونڈی،پروفیسر شاداب ناقد سربراہ شعبہ ء انگریزی ایس ای ڈی تی کالج ، اور ممبیء و مضافات اور بھیونڈی و اطراف کے کالجوں کے طلباء و طالبات نے شرکت کی. رسم شکریہ کے بعد تقریب اجتتام کو پہونچی.